Top

چُھپے دشمن

Insects

چُھپے دشمن

 

آج کے جدید دور کی بیماریوں کو سمجھنے کے لئے ہمیں پہلے زمانے کے سائنسدانوں کا شکر گزار ہونا چاہئے۔جنھوں نے جدید سہولیات نہ ہونے کے باوجودایسی تحقیقات کی ہیں جن کو بنیاد بنا کر آج کے سائنسدانوں کے لئے نت نئی راہیں ہموار ہو رہی ہیں۔اب انسانی بیماری کو ہی لے لیں۔اﷲبیماری سے بچائے۔لیکن جب ہم بیمار ہوتے ہیں تو اس کا سدّباب کرنے کے لئے بیماری کی وجوہات ڈھونڈی جاتی ہیں۔جلدی( skin ) کی بیماری کو ختم کرنے کے لئے مختلف دوائیں استعمال کی جاتی ہیں۔آپ نے کبھی سوچا کہ جلدی بیماری جیسے خارش،جسم پر لال رنگ کے نشان پڑ جانا،نزلہ،زکام،کھانسی،سردرد کی کیا وجوہات ہیں؟ اگر ہم مختلف لوگوں یا بچوں سے اس کا جواب پوچھیں تو وہ صرف اتنا ہی بتا سکیں گے۔کہ ہمارے ارد گرد موجود جراثیم بیماریاں پھیلاتے ہیں۔یہ بہت آسان جواب ہے۔لیکن صرف اتنا ہی بتا دینا کافی نہیں۔سائینس کی دنیا اتنی ہی وسیع ہے جتنی کہ یہ کائنات۔اﷲ نے انسان کو سب سے بڑھ کے رتبہ اُس کو کے علم کی بنیاد پر دیا ہے۔تو پھر ایک عام انسان کا بھی یہ فرض بنتا ہے۔کہ وہ بھی کائنات کی چیزوں پر ایک نظر ضرور ڈالے۔کیا آپ جانتے ہیں ؟جن جراثیم کو ہم صرف اپنے آس پاس خیال کرتے ہیں۔ان میں سے کچھ اتنے بے ادب ہیں کہ بن بُلائے مہمان کی طرح ہمارے اندر داخل ہو جاتے ہیں اور بعض اوقات خوفناک حد تک انسانی خلیوں کی توڑ پھوڑ کا باعث بنتے ہیں۔ہے نہ حیرت کی بات؟آپ کو مزید حیران کرنے کے لئے خارش کرنے والے کیڑوں کے بارے میں تفصیل سے بتایا جائے گا۔scabiesخارش کی بیماری پوری دنیا میں پائی جاتی ہے۔ یہ ایک ایسی متعدی بیماری ہے۔جس سے خارش اور لال نشان پڑجاتے ہیں جو Itch mite کے کاٹنے کی وجہ سے ہوتی ہے۔Itch mite ایسے کیڑے ہیں جو سکن کے اندر داخل ہو کر خارش کا باعث بنتے ہیں۔
ارسطو قدیم یونانی فلاسفر اور سائنسدان تھا۔جس نے خارش کرنے والی لیکھوں کی نشاندہی کی اور ان کوگوشت میں لیکھیں کہا۔

 

ہمارے مسلم سائنیسدان بھی اس حوالے سے جانے جاتے ہیں۔جی ہاں ابوالحسن الطبری دسویں صدی کے فزیشن ہیں۔وہ خاص طور پر اپنی تصنیف(معالجات البقراطیہ)Hippocratic Treatmentکی وجہ سے مشہور ہوئے ۔یہ ایک میڈیکل انسائکلوپیڈیا ہے ۔جو عربی زبان میں ہے۔۱۹۳۸ میں فرائڈ مین نے یہ کہاکہ الطبری ایک سچا انسان ہے جس نے خارش کی بیماری کا ذکر تفصیل سے کیا ہے۔کیوں کہ پہلے وقتوں میں طبیب دو بیماریوں Bahaq(جلد کی بیماری)اور Vitiligoبرص کی بیماری کو ایک ہی طریقہ علاج سے ختم کرنے کی کوشش کرتے تھے۔الطبری نے پہلی بار گھاؤ میں موجود کیڑوں کو دریافت کر کے ان کیُ پر اثر دوا تیار کی۔

 

آئیے اب ہم آپ کو بن بلائے مہمان یعنی itch mite,scabies,اور Bad bugsکے بارے میں تفصیل سے بتاتے ہیں۔کہ یہ کیا ہوتے ہیں۔ان کی زندگی،اختتامِ،یہ کس طرح بڑھتے اور پھلتے پھولتے ہیں اور ان کے علاج میں دواؤں کے علاوہ احتیاطی تدابیر کس طرح ممکن ہیں۔ان کےبارے میں پڑھنے کے بعد ممکن حد تک ان سے بچ سکتے ہیں۔

Scabiesخارش کرنے والے کیڑے۔:

خارش ،جلد کی خراشی حالت ہوتی ہے۔جو لیکھو ں کے کاٹنے کے بعد ہوتی ہے۔یہ جلد میں انڈے دینے کے لئے گُھس جاتی ہیں۔اس کے بعد شدید خارش ہوتی ہے۔لیکھوں کے جلد میں انڈے دینے کے ۳ سے ۶ ہفتوں بعدعلامات نمودار ہوتی ہیں۔جیسے شدید خارش،ہتھیلیوں سے جلد کا اُترنا اور اُکھڑنا۔یہ خارش جلد پر لیکھوں کی وجہ سے ہوتی ہے۔خارش ہمیشہ ایک جلد سے دوسری جلد میں پھیلتی ہے۔جیسا کہ ہاتھ ملانا۔یہ خارش کسی دوسرے کا تولیہ یا کپڑے استعمال کرنے سے بھی ہو جاتی ہے۔خشک خارش اپنے ظہور سے پہلے پہلے جب تک اس کی علامتیں ظاہر نہیں ہوتیں۔ایک شخض سے دوسرے کی طرف پھیلتی ہے۔اس خارش کی وجہ itch miteہیں۔بہت سے لوگ گندی اور میلی جگہوں میں رہتے ہیں ۔اس لئے خارش کرنے والے کیڑے تیزی سے پھیلتے ہیں۔یہ گھروں کے علاوہ سکولوں،ہسپتالوں،نرسنگ ہومز اور کنڈر گارٹن جیسی جگہوں میں موجود ہوتے ہیں جہاں لوگوں کی تعداد زیادہ ہوتی ہے۔
scabiesایک ایسا مرض ہے جو ایک دوسرے سے لگتا ہے اور itch miteکی وجہ سے ہوتا ہے۔
کبھی کبھار چھوٹے چھوٹے نشان جلد پر دیکھے جا سکتے ہیں۔اس کو انفیکشن سے زیادہ ایک مصیبت کہنا زیادہ بہتر ہو گاکیوں کہ miteجب جلد میں داخل ہو کرانڈے دیتے ہیں تو لگاتار خارش شروع ہو جاتی ہے۔جس سے جلد لال ہو جاتی ہے۔

 

 

Mite Burrow Under the Skin and Lay Eggs:

 

 

جب پہلی بار جلد ان سے متاثر ہوتی ہے۔تو علامات ظاہر ہونے میں دو سے چھ ہفتے لگ جاتے ہیں۔اگر بعد میں اُس انسان کو دوبارہ انفیکشن ہو جائے تو علامات ایک دن میں ظاہر ہونا شروع ہو جاتی ہیں۔یہ علامات تمام جسم پر بھی ہو سکتی ہیں اور صرف کلائی،انگلیوں یا کمر کے ارد گرد۔اس کے علاوہ سر بھی انفیکشن سے متاثر ہو سکتا ہے۔خارش رات کے وقت زیادہ ہوتی ہے۔یہ خارش مادہ miteکی وجہ سے ہوتی ہے جو جلد میں داخل ہو کر انڈے دے دیتی ہے۔

 

Female Lay Eggs:

اکثر صرف ۱۰ سے ۱۵ mitesانفیکشن میں شامل ہوتے ہیں اور یہ انفیکشن وہ دس منٹ کے اندرپھیلاتے ہیں۔خارش کرنے والے کیڑے ان لوگوں پر جلدی اثر انداز ہوتے ہیں جن میں قوت مدافعت کا نظام کمزور ہوتا ہے۔

 

Male Itch Mite:

اس کا دورانیہ حیات ۱۰ سے ۱۷ دن کا ہے۔

 

Female Dust Mite:

 

۷۰Female Dust Mite   دن تک زندہ رہ سکتی ہے۔اپنی زندگی کے پانچ ہفتوں میں وہ ۶۰ سے ۱۰۰ انڈے تک دے سکتی ہے۔

Dust Mite Laying Egg:

 

 

 

یوں دیکھنے میں تو یہ بہت چھوٹے چھوٹے کیڑے ہوتے ہیں۔لیکن ان کے کام بڑے ہوتے ہیں ۔یہ انسانی جسم میں انتشار پھیلاتے ہیں۔یہ انسانی خون اور جسم سے خوراک حاصل کرتے ہیں۔یہ انسانوں اور جانوروں دونوں کو اپنی خوراک بناتے ہیں۔اکثر لوگ یہ سمجھتے ہیں کہDust miteکاٹتے ہیں۔ایسا بالکل نہیں ہے۔Dust miteانسانی خلیوں میں شامل ہو کرانسان کے دفاعی خلیوں کو برباد کر دیتے ہیں۔

Dust mite کے ساتھ ساتھ Bad bugsبھی اپنا کردار بخوبی نبھاتے ہیں۔لیکن ان دونوں میں ٖ فرق ہے۔Dust mite مائکروسکوپک مکڑیاں ہوتی ہیں جو آسانی سے دکھائی نہیں دیتیں۔وہ جسم کے اندر داخل ہونے کی صلاحیت رکھتی ہیں۔ان کی آٹھ ٹانگیں ہوتی ہیں جوآدھے ملی میٹر سے بھی کم لمبی ہوتی ہیں ۔

Bad bug کو رات کا کیڑا کہا جاتا ہے۔یہ آسانی سے دیکھے جا سکتے ہیں اور ان کا کاٹنا ایسا ہوتا ہے جیسے کسی مچھر نے کاٹا ہو۔یہ مجموعی طور پر۳ یا ذیادہ گروہ کی صورت میں انسانی جلد کو نقصان پہنچاتے ہیں۔بعض اوقات انسانی جلدااتنی جلدی انفیکشن کا ردّعمل نہیں دکھاتی جتنی تیزی سے ان کا زہر الرجی کی صورت میں پھیلتا ہے۔یہاں تک کہ جلد پر چھالے بھی نمودار نہیں ہوتے۔
Bed bug

 

Bad bug چھوٹا ،چپٹا اور بغیر پروں والا کیڑا ہے۔جس کی چھ ٹانگیں ہوتی ہیں۔یہ جانوروں اورانسانوں کے خون سے اپنی خوراک لیتا ہے۔اس کا رنگ عمومی طور پر براؤن ہوتا ہے۔لیکن خوراک حاصل کرنے کے بعدوہ اکثر زنگ آلود لال رنگ کا ہو جاتا ہے

Bad Bug Life Cycle:

 

 

Stephon Doggettجو کہ ڈیپارٹمنٹ آٖ ٖف میڈیکل (antomology,ICPMP)آسٹریلیا سے تعلق رکھتے ہیں وہ کہتے ہیں کہ Bad bugکے انڈے ایک چاول کے دانے یا گندم کے دانے جتنے ہوتے ہیں جو عمومی طور پرگدوں کے ٹیگ اور تہہ کیے ہوئے کپڑوں میں پائے جاتے ہیں۔ان کے انڈے شروع میں خون کی کمی کی وجہ سے خاکستری ہوتے ہیں اور دو ہفتوں کے درمیان یہ لال رنگ کے ہو جاتے ہیں۔ایک فی میل Bad bugایک وقت میں پانچ انڈے دیتی ہے اور اپنی پوری زندگی میں ایک اندازے کے مطابق ۵۰۰ انڈے دیتی ہے۔
بالغ Bad bugایک سال تک بغیر خون کے زندہ رہ سکتا ہے۔لیکن Bad bugsگرم ماحول میں مر جاتے ہیں۔اس تصویر کے ذریعے آپ بآسانی Bad bugsکی زندگی کے مراحل سمجھ آ سکیں گے۔

 

 

This picture is from Dong -Hawan choe.university of Clifornia
ایک مزے کی بات یہ ہے کہBad bugsکا نام بھی اسی لئے پڑا ہے کیوں کہ وہ خود کو گدوں اور بستروں کے اندر چھپانا پسند کرتے ہیں۔یہ فرش، فرنیچر،لکڑی،بستروں کے اندر سارے دن چھپے رہتے ہیں۔جب انسان رات کا کھانا کھا لیتے ہیں اس وقت یہ سورج نکلنے تک متحرک ہو جاتے ہیں۔یہ تین منٹ کے اندر اپنی خوراک حاصل کر لیتے ہیں اور پھر اپنی خوراک کو ہضم کرنے کے لئے رینگتے ہوئے اپنی جگہ پر جا کر چُھپ جاتے ہیں۔Bad bugsدس مہینے تک زندہ رہ سکتے ہیں۔حیرت انگیز طور پریہ ڈرپوک چھوٹے چھوٹے خون چُوسنے والے کیڑے آپ کو جگائے بغیر ہی اپنی خوراک حاصل کر لیتے ہیں۔

 

Bad Bugs in Metress:

 

 

Bad bugs پر قابو پانے کے لئے صفائی بہت ضروری ہے اور پھر گرم پانی بھی جس میں صابن یا صرف شامل ہو بہت فائدے مند ہے۔

یوں Bad bugs اورitch miteدونوں ہی الرجی کا سبب بنتے ہیں۔
آپ نے عمومی طور پر miteنہیں دیکھیں ہوں گے۔لیکن ان کے دکھائی دینے کا مطلب ہر گز بھی یہ نہیں کہ وہ آپ کے ارد گرد نہیں ہیں۔ایک اندازے کے مطابق mitesکی ۴۸۰۰۰ سے زیادہ قسمیں دریافت ہوئی ہیں۔ان میںDust miteسانس کی بیماری اور چھینکوں کا با عث بنتے ہیں۔

 

 

Dust Mite Sucking Blood
کیا آپ جانتے ہیں کہ آپ کی جلد کے اندر Bugsبھی رہتے ہیں۔

Eye where bugs live

اگر آپ نے Contact lensesلگائے ہوئے ہیں۔تو ان کوتازہ پانی سے مت دھوئیں۔کیوں کہ آنکھ میں موجود Bugاس عمل سے جس انفیکشن کا باعث بنتا ہے۔وہ Acanthamoeba Keratistisکہلاتا ہے۔اس کی علامات میں آنکھ کا لال ہو جانااور ایسا محسوس ہونا جیسے آنکھ میں کچھ موجود ہے۔روشنی کی حساسیت آنکھ پر اثر انداز ہونا۔اگر اس Acnathamoebaکا علاج نہ کیا جائے توآنکھ کی بینائی بھی جا سکتی ہے۔
یوں Scabiesخارش کا سبب بننے والے کیڑوں کی روک تھام کے لئے ضروری ہے کہ گھروں اور استعمال کی چیزوں کو ممکنہ حد تک صاف ستھرا رکھیں۔اسلام میں صفائی کو نصف ایمان کا درجہ اسی لئے دیا

ہے کہ صفائی سے نہ نظر آنے والے جراثیم کی روک تھام ممکن ہو سکتی ہے۔اس کے علاوہ کپڑے دھوتے ہوئے گرم صابن یا سرف والا پانی استعمال کریں اور دھلے ہوئے کپڑوں کو تیز دھوپ میں ڈالیں۔کیوں کہ ہر بیماری کا سدّباب موجود ہے ۔دیکھنا صرف یہ ہے کہ انسان اپنے علم و فہم کو استعمال ۔انسانوں اور کیڑے مکوڑوں کی یہ کشمکش نت نئی تحقیق کا سبب ہے۔ ۲۰۱۷ کی تحقیق کے مطابقDr Alangaden Says,
;Mycobacterium marinum is not a life threaening illness,bt it remains an recognized cause of skin infection;
اب دیکھنا صرف یہ ہے کہ انسان اپنی عقل و فہم کو استعمال کرتے ہوئے ان سے کس حد تک بچ سکتا ہے۔
Refrences:
1. Wikipedia.org 1
2.The epidemiology of scabies in UK
3.The Medical Dictionary by Medical net,inc
4.Mathise Ge of mites and men.lesson in scabies for the infectious disease clinician
5.Problem and Diagnosin Scabies,a Global Disease in Human and Animal populatins
6.Medicine Net,s Skin care and & conditions news letter
7.John A Daller,MD on Tuesday,june21,2016;Bad bugs and their habits;
8.The Globel Burden of Skin Disease in 2010

Science

No Comments

Post a Comment