Top

Baba Vanga

Baba Vanga

بابا ونگا بلغاریہ کی ایک روحانی خاتون تھیں ۔جو ۳۱ جنوری ۱۹۱۱ء کو پیدا ہوئیں اور ۱۹۹۶ء میں ۸۵ سال کی ونگا کی زندگی پر نظر ڈالی جائے تو پتا چلتا ہے کہ وہ جسمانی طور پر کمزور بچی تھی۔یہ بات بھی کافی دلچسپ ہے کہ اس کا نام کسی اجنبی نے رکھا تھا کیونکہ یہ اصول تھا کہ جب بچہ پیدا ہوتو گلی میں نکل کر کوئی بھی اجنبی انسان نظر آتا تو اس سے نومولود کا نام دریافت کیا جاتا تھا۔یوں جب بابا ونگا بلغاریہ میں پیدا ہوئی تو اس کا نام وینجیلا رکھا گیا جو بعد میں ونگا بن گیا۔ونگا کی ماں جلد ہی مر گئی تھی۔ونگا کے والد دوسری جنگ عظیم میں سپاہی تھے۔جنگ کے بعد سربین اتھارٹی نے اس کے والد کو قید کر لیا۔جس کی وجہ سے ونگا کی فیملی نے کئی سال غربت کے گزارے۔
ونگا کی زندگی میں ایک تکلیف دہ موڑ جب آیا ۔جب ایک ٹورنیڈو نے اس کو اٹھا کر باہر کھیتوں میں پھینک دیا۔اس واقعے نے اس کو بہت خوفزدہ کر دیا تھا۔کیونکہ اس کی آنکھیں مٹی اورریت کی وجہ سے کھل نہیں رہی تھیں اور وہ کافی تکلیف میں تھی۔اس کے لئے اس وقت فوری پیسے کی ضرورت تھی جو کہ مہیا نہیں تھے۔جس کے نتیجے میں وہ بینائی سے محروم ہو گئی تھی۔۱۹۲۵ء میں ونگا نے سربیا میں نابینا بچوں کے سکول میں داخلہ لے لیا۔اس نے اس سکول میں تین سال گزارے اور اس نے  پیانو سیکھا ۔نابینا ہونے کے باوجود کھانا پکانا اور صفائی کرنا سیکھی۔اس کے باپ نے قید سے رہائی کے بعد دوسری شادی کر لی تھی۔اپنی سوتیلی ماں کے انتقال کے بعد وانگا اپنے بہن بھائیوں کا خیال رکھنے کے لئے واپس گھر چلی گئی۔اس کا خاندان بہت غریب تھا اور وہ تمام دن کام کرتی تھی

‏۱۹۳۹ء میں وانگا کو پھیپڑوں کی شدید بیماری لاحق ہوئی ۔ ڈاکٹروں نے اسے ایک لاعلاج بیماری قرار دیا اور بتایا کہ وہ جلد مر جائے گی لیکن وہ تیزی سے صحت یاب ہونے لگی۔اس وقت ونگا کو اپنے اندر موجود غیر معمولی صلاحیت کا اندازہ ہونے لگا تھا .لوگ اس کے پاس آنے لگے تھے اپنے مختلف مسائل کے حل کے لئے ۸ اپریل کو بلغارین تورج بورس 111 نے اس کے گھر کا دورہ کیا۔ ۱۰ مئی ۱۹۴۲ء کو ونگا کی شادی ایک بلغارین سپاہی سے ہو گئی۔بابا ونگا اپنی پیشن گوئیوں کی وجہ سے مشہور ہیں ۔گو کہ ان کی تمام کہی ہوئی باتیں درست نہیں ہیں لیکن بہت سی اس قدر ٹھیک ہیں کہ عقل دنگ رہ جاتی ہے۔ونگا نے کبھی کوئی کتاب نہیں لکھی ان کی کہی ہوئی باتوں کو لوگوں نے لکھا ہے۔ونگا کی پیشن گوئیوں میں ۲۰۰۰ ء میں روسی آبدوز کا تباہ ہونا۔۲۰۰۱ء میں دو پرندوں کا ورلڈٹریڈ سینٹر سے ٹکرانا۔۲۰۰۴ء میں آنے والا سونامی اور امریکہ کے ۴۴ویں صدر کے افریقی نسل ہونے کی پیش گوئی بھی درست ثابت ہوئی۔ ۲۰۱۰ء میں ونگا نے پیشن گوئی کی کہ ملک شام کا تنازعہ سامنے آئے گا۔داعش یورپ پر حملے کرے گا اس کے علاوہ امبولا وائرس بھی مشکلات پیدا کرے گا۔یہ تمام باتیں بھی سچ ثابت ہوئیں ۔لیکن کچھ ایسی باتیں بھی ہیں جو غلط ثابت ہوئیں جیسے ۲۰۱۱ء میں دوسری جنگ عظیم کا آغاز ہونا۔لیکن کچھ لوگوں کا یہ ماننا ہے کہ شام اور عرب کے حالات دوسری جنگ عظیم کی طرف ہی گھسیٹ رہے ہیں ۔اس طرح   ۲۰۱۴ء میں مسلمانوں کا یورپ پر حملہ،۲۰۱۸ء میں چین کا سپر پاور بننا،۲۰۲۳ء میں زمین کے مدار کا ٹیڑھا ہونا۔مارس پر انسانوں کی کالونی۔ یہ تمام باتیں اس کے علاوہ آنے والے نئے سال کی پیشن گوئی قدرتی آفات زلزلے،سونامی ،روس سے شہاب ثاقب کا ٹکرانا۔روس کے صدر پیوٹن پر قاتلانہ حملہ۔امریکی صدر کا کسی پراسرار بیماری میں مبتلا ہونا۔۲۰۳۳ء میں قطبین کے علاقوں کی برف پگھلے گی اور سمندروں کے پانی کی سطح بلند ہو جائے گی۔۲۰۴۵ء میں یورپ میں اسلامی خلافت قائم ہو جائے گی۔۲۰۴۶ء میں انسانی اعضاء خود بنائے جائیں گے۔۵۰۷۹ء میں دنیا ختم ہو جائے گی۔یہ تمام پیشن گوئیاں جہاں دلچسپ ہے وہاں کافی حد تک خوفناک بھی ہیں ۔

No Comments

Post a Comment